122

برہانی وانی کی تیسری برسی آج منائی جا رہی ہے

حریت رہنما اور حزب المجاہدین کے کمانڈر برہان وانی کی تیسری برسی آج منائی جا رہی ہے۔

برہانی وانی کی تیسری برسی کے موقع پر مقبوضہ کشمیر میں آج مکمل ہڑتال ہے جبکہ وادی بھر میں تمام تجارتی مراکز بند ہیں۔ بھارتی فوج نے 8 جولائی 2016 کو سری نگر سے 60 کلو میٹر کے فاصلے پر واقع کوکرناگ کے علاقے میں کارروائی کے دوران برہان وانی کو شہید کر دیا تھا۔

برہانی وانی کی شہادت کے بعد مقبوضہ کشمیر کے بیشتر اضلاع میں کئی ماہ تک مظاہرے جاری ہے۔ بھارتی فوج نے مظاہرین پر پیلٹ گنز کا استعمال کیا جس میں 85 کشمیری شہید جبکہ ہزاروں افراد زخمی ہوئے۔

اسکول ہیڈ ماسٹر کے صاحبزادے برہان وانی کا تعلق ضلع پلوامہ کے علاقے ترال سے تھا۔ آٹھ جولائی 2016 کو برہان وانی کو دو ساتھیوں سمیت قابض بھارتی افواج نے شہید کردیا تھا۔ ان کی شہادت کے بعد مقبوضہ کشمیر میں بھارت نے صورتحال قابو میں کرنے کے لیے دو ماہ تک کرفیو نافذ کیا تھا۔

عالمی مبصرین کے مطابق برہان وانی کی شہادت نے علاقے کے نوجوانوں میں حق خود ارادیت کے حصول کی خاطر ایک نئے جذبے کو جنم دیا اور جاری تحریک مزاحمت میں ایک نئی روح پھونکی تھی۔ برہان وانی کے چھوٹے بھائی خالد کو بھی اس سے قبل قابض بھارتی افواج نے فائرنگ کرکے شہید کیا تھا۔

پاکستان کے دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے برہان وانی کی تیسری برسی کے موقع پر سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ’ٹوئٹر‘ پر جاری کردہ اپنے ایک پیغام میں کہا ہے کہ برہان وانی دنیا سے چلے گئے لیکن عوام کے دلوں میں ہیں۔

ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ بھارتی مظالم کے باوجود کشمیریوں کی جدوجہد جاری ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ حق خود ارادیت کے حصول کے لیے مقبوضہ کشمیر میں آج بھی مکمل ہڑتال ہے۔

چیئرمین تحریک حریت جموں و کشمیر محمد اشرف صحرائی نے برہان وانی کو زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی شہادت نے حق خود ارادیت کے حصول کے لیے ایک نئے جذبے کو جنم دیا ہے۔

انہوں نے سری نگر میں جاری کردہ اپنے بیان میں کہا کہ بھارت اندھی ریاستی طاقت کا استعمال کرکے کبھی بھی کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی تحریک کو دبا نہیں سکے گا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق اشرف صحرائی نے عالمی برادری پر زوردیا کہ وہ بھارت کو طاقت کے اندھے استعمال سے روکے اور اقوام متحدہ کی قرارداد کے مطابق انہیں حق خود ارادیت دلانے میں اپنا کردار ادا کرے۔

مقبوضہ کشمیر سے تعقل رکھنے والے شبیر احمد شاہ، شبیر احمد ڈار، محمد اقبال میر، امتیاز احمد، غلام نبی وار، غلام نبی وسیم اور اسلامی تنظیم آزادی کے ترجمان سمیت دیگر نے بھی برہان وانی کی شہادت پر انہیں زبردست خراج عقیدت پیش کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں