225

دنیا بھر میں عیدالاضحیٰ کے اجتماعات

سعودی عرب، فلسطین، متحدہ عرب امارات اور دیگر خلیجی ممالک سمیت یورپ، امریکا، انڈونیشیا، جاپان اور افغانستان کے علاوہ دنیا کے دیگر خطوں میں عیدالاضحٰی مذہبی جوش جذبے سے منائی گئی۔

نماز عید کا سب سے بڑا اجتماع سعودی عرب میں ہوا جہاں دنیا بھر سے لاکھوں مسلمان حج کی ادائیگی کے لیے موجود تھے۔

سعودی عرب کے شہر مکہ مکرمہ میں مسلمانوں کے اہم مذہبی مقام خانہ کعبہ میں عیدالاضحٰی کی نماز ادا کر دی گئی، جس کی امامت شیخ ڈاکٹر سعود الشریم نے کی اور اس میں لاکھوں فرزندان اسلام نے شرکت کی۔

اس موقع پر روح پرور مناظر دیکھنے کو آئے اور مسلمانوں نے اللہ کے حضور خشوع و خضوع سے دعا اور استغفار کیا۔

ڈاکٹر سعود الشریم نے نماز عید کے خطبے میں فلسفہ قربانی کی اہمیت پر روشنی ڈالی اور مسلمانوں کو محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے اسوہ حسنہ پر عمل کرنے کی ہدایت کی۔

متحدہ عرب امارات کی مساجد اور عید گاہوں میں نماز عید کے اجتماعات ہوئے، سب سے بڑا اجتماع شیخ زید جامع مسجد ابوظہبی میں ہوا اور نماز عید کے بعد توپ کے دو گولے داغ کر عید قربان کا اعلان کیا گیا۔

جنگ کے شکار ملک شام میں بھی مذہبی جوش و جذبے سے عیدالاضحیٰ منائی گئی۔

انڈونیشیا اور فلپائن سمیت مشرق بعید کے کئی ممالک کے مسلم اکثریتی علاقوں میں بھی عیدالاضحیٰ کی نماز کے بعد سنت ابراہیمی پر عمل کرتے ہوئے جانوروں کی قربانی کی گئی۔

مقبوضہ بیت المقدس فلسطین میں بھی عیدالاضحی روایتی جوش و جذبے سے منائی گئی اور مسجد الاقصیٰ میں عید کا سب سے بڑا اجتماع ہوا۔

سعودی عرب سمیت دیگر عرب ممالک کے علاوہ امریکا، کینیڈا اور یورپ کے علاوہ آسٹریلیا اور ترکی میں بھی مسلمانوں نے عیدالاضحٰی منائی اور قربانی کا فریضہ انجام دیا گیا۔

عراق میں بھی عیدالاضحیٰ مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ منائی گئی۔

اس کے علاوہ جاپان، بوسنیا اور افغانستان میں بھی عیدالاضحٰی مذہبی جوش و جذبے سے منائی گئی اور سنت ابراہیمی پر عمل کرتے ہوئے مویشی قربان کیے گئے، تاہم پاکستان اور بھارت میں عیدالاضحیٰ بروز ہفتہ (2 ستمبر کو) منائی جائے گی۔

ادھر پاکستان کے صوبے خیبرپختونخواہ اور وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے (فاٹا) میں افغان مہاجرین کیمپوں میں مقیم افراد نے بھی جمعہ کے روز عیدالاضحیٰ منائی اور قربانی کا فریضہ انجام دیا گیا۔

عیدالاضحیٰ کی نماز اچینی بالا، ناگمان، شمشتو کیمپ اور دیگر مقامات پر قائم افغان مہاجرین کیمپوں میں ادا کی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں