79

پی ٹی ایم کا لحجہ پاکستان کیلئے ٹھیک نہیں : عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے کہاہے کہ ایک نئی تنظیم پی ٹی ایم بنی ہے جوکہ پٹھانوں کی تکلیف کی بات کرتی ہے وہ ٹھیک بات کرتی ہے لیکن ان کا لہجہ پاکستان کیلئے ٹھیک نہیں ہے ، اس وقت جو لوگ تکلیف سے گزرے ہیں ان کو فوج کے خلاف کرنا ، اس طرح کے نعرے مارنا،اس سے پاکستان اور قبائلی علاقے کو فائدہ نہیں ہوگا۔

اورکزئی میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہناتھا کہ میںآ پ کو یقین دلانے آیاہوں کہ ہمارا پاکستان آپ کی قربانیوں کو نہیں بھولے گا اور آپ کی پوری مدد کرے گا ،مجھے صرف افسوس ہے کہ پی ٹی ایم ایک نئی تنظیم بنی ہے ،جو کہ پٹھانوں کی تکلیف کی بات کرتی ہے ،وہ ٹھیک بات کرتی ہے ، وہ وہی بات کرتے ہیں جو میں پندرہ سال سے کر رہا تھا ، جب جنگ ہوتی ہے تو بے قصور لوگ مارے جاتے ہیں ۔

عمران خان نے کہا کہ وہ ٹھیک بات کرتے ہیں لیکن جس طرح کا وہ لحجہ استعمال کرتے ہیں وہ ہمارے ملک کیلئے ٹھیک نہیں ہے ، اس وقت لوگ جو تکلیف سے گزرے ہیں ان کو فوج کے خلاف کرنا ،اس طرح کے نعرے مارنا ،اس سے پاکستان اور قبائلی علاقے کو کیا فائدہ ہوگا؟ ، برا وقت تھا، میں نے سب سے زیادہ اس کے خلاف آواز اٹھائی لیکن اب ہم نے یہ سوچنا ہے کہ آگے کس طرح بڑھنا ہے ،اصل چیلنج یہ ہے کہ قبائلی علاقوں کے لوگوں کو تعلیم دینی ہے تاکہ آپ اٹھیں اور اوپر آئیں اور حالات بہتر کریں ،نہ کہ لوگوں کے دکھ اور در د پر نمک چھڑک کر بھڑکانا اور پھر حل پیش نہ کرنا ہے ۔عمران خان کا کہناتھا کہ اس کا حل یہ ہے کہ ہم مرہم پٹی کریں ، جو ان پر ظلم ہوئے ہیں ،ان کی مدد کریں ، ان کو پیسے دیں تاکہ وہ اپنے گھر بنائیں اور کاروبار کریں۔وزیراعظم عمران خان کا کہناتھا کہ میں نے وزیراعلیٰ سے کہاہے کہ رجسٹریشن کریں ، ہم نے آئی ڈی پیز کو پیسے دینے ہیں تاکہ وہ اپنے گھر ٹھیک کریں اور کاروبار چلائیں ، محمود خان کی حکومت آپ کی پوری مدد کرے گی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں