77

اسد عمر کے اعلان کے بعد وزیراعظم نے وزیرتوانائی عمرایوب کو طلب کرلیا

وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر نے وزارت کا قلمدان چھوڑنے کا اعلان کردیا اور اس کی وجہ وزیراعظم کی خواہش کو قراردیا۔ اسد عمر کے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر اعلان کے بعد وزیراعظم عمران خان نے فوری طورپر وزیرتوانائی عمرایوب کو طلب کرلیا۔ دنیا نیوز کے مطابق عمر ایواب کو وزیراعظم ہائوس میں طلب کیا گیا ہے ۔

ادھر اے آروائے نیوز کے مطابق عمر ایوب کی وزارت توانائی میں کارکردگی مثبت ہے اور عمر ایوب کا تجربہ وزارت خزانہ میں بھی کافی ہے ،اس بات کا بھی قوی امکان ہے کہ انہیں اضافی چارج دیدیا جائے یا پھر عمرایوب کو وزارت توانائی چھوڑ کر وزارت خزانہ سونپ دی جائے لیکن اس کا فیصلہ کچھ دیر میں وزیراعظم کیساتھ عمر ایوب کی ہونیوالی میٹنگ میں کیا جائے گا۔ شوکت عزیز کے دور حکومت میں بھی عمر ایوب وزیرخزانہ رہ چکے ہیں اور دو سے تین بجٹ بھی پیش کرچکے ہیں، اسی وجہ سے ان کا نام زیر گردش تھا کہ انہیں وزارت خزانہ سونپی جاسکتی ہے ۔

یادرہے کہ اس سے قبل وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے وزارت خزانہ کا قلمدان چھوڑنے کا اعلان کرتے ہوئے عمران خان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے اور یقین ظاہر کیا ہے کہ وزیراعظم نیا پاکستان بنائیں گے۔اپنے پیغام میں انہوں نے کہا کہ ”کابینہ میں ردوبدل کے سلسلے میں وزیراعظم چاہتے ہیں کہ میں وزارت خزانہ چھوڑ کر وزارت توانائی کا قلمدان لے لوں لیکن میں نے وزیراعظم کو اعتماد میں لیا ہے کہ میں کابینہ کا مزید حصہ نہیں رہوں گا، میرا یقین ہے کہ عمران خان پاکستان کیلئے امید ہیں اور نیا پاکستان بنائیں گے۔“

واضح رہے کہ گزشتہ کچھ ہفتوں سے الیکٹرانک اور سوشل میڈیا پر یہ خبریں گردش کر رہی تھیں کہ وزیراعظم اسد عمر کی کارکردگی سے خوش نہیں ہیں اور انہیں عہدے سے ہٹانا چاہتے ہیں لیکن اب اسد عمر نے خود ہی اس بات کا اعلان کر دیا ہے کہ وزیراعظم کی خواہش ہے کہ میں وزارت توانائی کا قلمدان سنبھالو، لیکن میں ایسا نہیں کر سکتا اور اب کابینہ کا مزید حصہ نہیں رہوں گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں