79

این مورگن کا پاکستانی ٹیم کو ورلڈکپ کیلئے فیورٹ قرار دینے کا بیان چال ہو سکتی ہے کیونکہ

پاکستان کے مایہ ناز سابق لیگ سپنر مشتاق احمد نے انگلینڈ کے کپتان این مورگن کی جانب سے پاکستان کو ورلڈکپ کیلئے فیورٹ قرار دینے کے بیان کو چال قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس کا مقصد سیریز سے پہلے گرین شرٹس کو دباﺅ میں لینا ہو سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق 1992ءکا ورلڈ کپ جیتنے والی پاکستانی ٹیم کے اہم رکن اور انگلینڈ کرکٹ ٹیم کیساتھ کئی سال گزارنے والے مشتاق احمد نے کہا کہ پاکستان کے پاس دیگر ٹیموں کی طرح عالمی کپ جیتنے کا موقع ہے لیکن انگلینڈ کے کپتان کا پاکستان کو فیورٹ قرار دینے کا بیان چال ہو سکتا ہے تاکہ ورلڈکپ سے قبل انگلینڈ کے خلاف 5 ون ڈے میچوں کی سیریز سے قبل سرفراز الیون کو دباؤ میں لیا جا سکے۔

لاہور میں ایک تقریب کے دوران گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو ورلڈ کپ سے قبل انگلینڈ کے خلاف ون ڈے سیریز کھیلنی ہے لہٰذا انگلینڈ کے کھلاڑی اس طرح کے بیانات کے ذریعے نفسیاتی طور پر پاکستان کو دباؤ میں لے سکتے ہیں۔

اس موقع پر مشتاق احمد نے پاکستان کے ورلڈکپ جیتنے کے امکانات کو بھی روشن قرار دیا تاہم ان کا کہنا تھا کہ اس کیلئے ضروری ہے کہ پاکستانی سکواڈ ذہنی طور پر مضبوط، نوجوان اور تجربہ کار کھلاڑیوں پر مشتمل ہو۔ انہوں نے عابد علی اور محمد رضوان کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ دونوں نے آسٹریلیا کے خلاف ایسے ٹیلنٹ اور مزاج کا مظاہرہ کیا ہے جو بین الاقوامی سطح کا بلے باز بننے کیلئے درکار ہوتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں