60

پی سی بی چیئرمین احسان مانی کو ماضی میں کس کمیشن نے طلب کیا

پاکستان کے مایہ ناز سابق لیگ سپنر عبدالقادر خان نے کہا ہے کہ ورلڈ کپ 1999ءمیں بنگلہ دیش کے ہاتھوں مشکوک شکست پر جسٹس (ر) بھنڈاری کمیشن بنا تو اس میں وہ بھی شامل تھے اور حیرانگی کی بات یہ تھی کہ اس کمیشن نے احسان مانی کو بھی طلب کیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وسیم اکرم، جاوید میانداد اور سلیم ملک سمیت کئی کرکٹرز اس کمیشن کے سامنے پیش ہوئے اور حیرانگی کی بات یہ تھی کہ اس کمیشن نے احسان مانی کو بھی بلایا تھا جہاں موجودہ چیئرمین پی سی بی تو پیش نہیں ہوئے البتہ ان کے وکیل ضرور آیا کرتے تھے۔

عبد القادر نے مزید کہا کہ کمیشن کے سامنے سلیم پرویز نامی شخص پیش ہوا جس نے حلفاً اس بات کا اعتراف کیا کہ اس نے ٹیسٹ سپنر مشتاق احمد کو پیسے دئیے تھے۔عبدالقادر نے افسوس کا اظہار کیا کہ میچ فکسنگ میں سزا یافتہ لوگ کسی نا کسی حیثیت میں پی سی بی کا حصہ بن جاتے ہیں جسے افسوسناک ہی کہا جا سکتا ہے۔

سابق لیگ سپنر نے کہا کہ وسیم اکرم سے سلمان بٹ تک کسی کیلئے ملک کا نام خراب کرنے پر چھوٹ نہیں ہونی چاہیے، اگر انہیں معاف کیا گیا ہے تو دانش کنیریا کو بھی معافی ملنی چاہیے لیکن افسوس پی سی بی میں سزا اور جزا کا کلچر مختلف افراد کے لیے مختلف ہے۔

سابق کپتان نے ہیڈ کوچ مکی آرتھر اور چیف سلیکٹر انضمام الحق پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ دونوں اشخاص کے فیصلوں کے باعث ٹیم پاکستان کی پرفارمنس افسوس ناک ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر وہ چیئرمین پی سی بی ہوتے تو دونوں کو ورلڈ کپ سے پہلے فارغ کر دیتے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں