82

ندیم الرحمان میمن کی کمشنر آفیس میں ریونیو کے نمائندوں سے اجلاس

ضلع عمرکوٹ کی تمام اینیمی پراپرٹی کی زمینیں ، دوکانیں اور پلاٹوں کے تفصیلات کے مکمل اعداد شمار جمع کرکے رپورٹ دی جائے اور قحط سالی والی علائقوں میں پہلے مرحلے کے دوران تقسیم کی گی امدادی گندم کی جو بوریاں بقایا رہ گی ہیں انہیں دوسرے مرحلے میں شامل کیا جائے ۔

ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر عمرکوٹ ندیم الرحمان میمن نے ڈپٹی کمشنر آفیس میں ریونیو کے نمائندوں سے ایک اعلی سطح اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر انہوں نے چاروں تعلقوں کے اسسٹنٹ کمشنرز اور مختیارکاروں سے پڑتال ، خریف کی بوائی کے تمام رجسٹرڈ ، سال 2018-19 کی جمع بندی کے مکمل نقشے ، کریڈٹ سرٹیفکیٹ اور دیگر روینیو ریکارڈ کی مکمل تفصیلات سے متعلق معلومات حاصل کیں ۔

اس موقع پر انہوں نے تمام مختیارکاروں کو ہدایت کی کہ آئندہ اجلاس میں جو بھی ریکارڈ مکمل نہیں ہے جس میں نا مکمل جمع بندی نقشے پڑتال اور وصول کئے گے سالانہ انکم ٹیکس کے مکمل تفصیل فراہم کی جائیں دیگر صورت میں محکمہ جاتی کاروائی کی جائے گی ، انہوں نے مزید کہا کہ آئندہ اجلاس میں تمام پتیداروں کو فیلڈ کے رجسٹرڈ کے ساتھ شرکت کرنے کے لیے پابند کیا جائے اور ان کے ریکارڈ کی تصدیق کی جائے ، انہوں نے کہا کہ پروینشن کمیٹی نیب کی رپورٹ دینے کے لیے تمام آفسران پابند ہیں اور یہ رپوٹ جلد سے جلد فراہم کی جائے ، اجلاس میں فیصلا کیا گیا کہ پہلے مرحلے میں تقسیم نا کی گی گندم کی بوریوں کو دوسرے مرحلے میں لوگوں کو تقسیم کی جائے اور جو نام امدادی گندم کی بوریوں کی لسٹ میں شامل نہیں کئے گے انہیں نادرا سے تصدیق کروانے کے لیے مکمل لسٹیں نادرا ہیڈکواٹر کو بھیجی جائیں ۔

اس موقع پر انہوں نے اجلاس میں موجود محکمہ فاریسٹ کے نمائندوں کوہدایت کی کہ جو گاؤں محکمہ فاریسٹ کی زمینوں پر غیر قانونی آباد کئے گے ہیں ان کی داخلا ختم کرنے کے لیے ایک ریفرنیس تیار کیا جائے جو کمشنر میرپورخاص کو مکمل تفصیلات کے ساتھ بھیجا جائے ، انہوں نے کہا کہ ضلع عمرکوٹ میں محکمہ فاریسٹ کی نئی سروے جلد سے جلد کروائی جائے ، اس موقع پر ڈی ایف او عمرکوٹ مختیار علی ملاح نے کہا کہ تعلقہ عمرکوٹ کی 189 ایکڑ زمین پر قبضے کئے گے ہیں جبکہ تعلقہ کنری میں محکمہ فاریسٹ کی زمینوں پر مکمل قبضے ختم کروائے گے ہیں۔

اس موقع پر ڈپٹی کمشنر نے ڈی ایف او کو ہدایت کی کہ مختیارکار عمرکوٹ کے ساتھ مل کر محکمہ فاریسٹ کی زمین پر موجود تمام غیر قانونی گاؤں میں بنے گھروں کی تفصیلات ،سرکاری عمارتیں اور دیگر انفرا اسٹیکچر کی مکمل رپورٹ تیار کرکے دی جائے جو کہ ریفرینس میں شامل کی جائے گی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں