86

“اب میں قوم سے یہ درخواست کرتا ہوں کہ“ سرفراز احمد

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہا ہے کہ جو ہو گیا، سو ہوگیا اب میں قوم سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ ہمارے لئے دعا کریں اور ہم ورلڈکپ میں اپنی صلاحیتوں سے بڑھ کر کارکردگی دکھانے کی کوشش کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہم فٹنس ٹیسٹ کے بعد جب سلیکشن کمیٹی کیساتھ بیٹھیں گے تو دو سے تین کھلاڑیوں کا انتخاب کریں گے جس کے بعد ہمارا سکواڈ مکمل ہو گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہیڈ کوچ مکی آرتھر کیساتھ بہت اچھا تعلق ہے جنہوں نے مجھے کہا ہے کہ ٹیم پر توجہ دو، باقی سب میں دیکھ لوں گا۔ مکی آرتھر فرنٹ پر آتے ہیں اور تمام بیرونی دباﺅ برداشت کرتے ہیں تاکہ ٹیم اور کپتان اپنے کام پر دھیان دے سکے اور میں گراﺅنڈ کے اندر معاملات کو دیکھتا ہوں۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ قومی ٹیم کی قیادت آسان کام نہیں ہے بالخصوص ایشین ٹیموں کی کپتانی بالکل بھی آسان نہیں ہوتی کیونکہ نان ایشین ٹیموں میں وہ کپتان اور پھر ٹیم کا انتخاب کرتے ہیں اور خراب کارکردگی کے باوجود بھی اس میں ایک سے دو سال تک تبدیلی نہیں آتی لیکن ایشین ٹیم کا کپتان ہونے کے ناطے ایک یا دو میچ ہارنے پر ہی آپ کیلئے مسائل کھڑے ہو جاتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں