75

”ہو سکتاہے کہ نوازشریف کو ایک آپریشن سے گزرنا پڑے “ نواز شریف کے ذاتی معالج

سابق وزیراعظم نوازشریف نے آج صبح مولانا فضل الرحمان سے جاتی امراءمیں ملاقات کی تاہم اس کے بعد وہ شریف میڈیکل سٹی گئی جہاں ان کا معائنہ کیا گیا اور مختلف ٹیسٹ کیے گئے جس کے بعد وہ واپس گھر روانہ ہو گئے ۔

تفصیلات کے مطابق نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے کہاہے کہ نوازشریف کے مختلف نوعیت کے ٹیسٹ کیے گئے ہیں ، ان کے دل کی دھڑکن نارمل نہیں ہے تاہم نوازشریف کا علاج جاری ہے ۔انہوں نے کہا کہ نوازشریف کو پیس میکر لگانے کی ضرورت ہے اور ہو سکتاہے کہ نوازشریف کو ایک آپریشن سے بھی گزرنا پڑے ۔

انہوں نے کہا کہ ایسے مریضوں کے علاج کے وقت کے بارے میں کچ نہیں کہا جا سکتا ، میاں صاحب گھر جاتے ہیں لیکن مسلسل رابطے میں رہتے ہیں ، نوازشریف کی ایم آر آئی کی گئی ہے ۔ان کاکہنا تھاکہ نوازشریف کے دل کے مرض کی ادویات تجویز کی ہیں ، میڈیکل بورڈ کی نگرانی میں نوازشریف کا علاج جاری ہے اور بورڈ کی سفارشات پر ہی علاج ہو گا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں