75

حکومت جو کام دھاندلی سے نہیں کر سکی ،اب نیب گردی سے کرنا چاہتی ہے :بلاول بھٹو

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ نیب مشرف کا بنا یا ہوا کالا قانون ہے ،حکومت جو کام دھاندلی اور جے آئی ٹی سے نہیں کر سکی ،وہ کام نیب گردی سے کرنا چاہتی ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ حکومت ہوش کے ناخن لے اور جمہوری طریقے پر عمل کرے ورنہ پرویز مشرف والا حال ہو گا ۔

کراچی میں میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نیب خود حکومت کے ساتھ ملے ہوئے منی لانڈررز کو تحفظ فراہم کرتا ہے ،انہیں تھوڑے بہت پیسوں کے عوض چھوڑ سکتا ہے ،نیب کا قانون ججز ،جنرلز ،سویلین اور سیاستدانوں کے لیے مختلف ہے ،ہم ایسے دہرے قانون کو نہیں مانتے ۔بلاول بھٹو نے کہا کہ سندھ حکومت نے ڈرامے بازی اور ٹویٹ نہیں کی بلکہ کام کیا ہے،جنوبی ایشیا کا سب سے بڑا آٹیزم سینٹر کراچی میں قائم کیاگیاجہاں میں بچوں کی مہارتوں کے لیے بھی سہولیات فراہم کی گئی ہیں،سندھ کےدیگر شہروں میں بھی آٹیزم سینٹر کھولیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ آٹیزم کاعلاج بے حد مہنگا ہے،عام آدمی کی پہنچ سے دور ہے لیکن مفت علاج پہنچانا حکومت کا کام ہوتا ہے،پاکستان کے عوام کے لیے علاج کی مفت سہولت لائیں گے،معذور افراد کی بحالی کاعلاج مشکل ہوتا ہے لیکن یہاں پراس کا علاج مفت ہورہا ہے، ہماری کوشش ہے کہ اس سہولت کو سندھ تک پھیلائیں۔

ان کا کہنا تھا کہ 18ویں ترمیم پر ڈاکہ ڈالنے کی بات ہو تو پیپلز پارٹی جذباتی ہو جاتی ہے،مشرف کے وزراءکو رکھیں گے تو وہ آمرانہ مشورے ہی دیں گے ،اگر ایسا جاری رہا تو ان کا حشر بھی پرویز مشرف والا ہو گا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں