88

مجھے ہائیکورٹ کا قانونی تحفظ موجود ہے تو گرفتاری کیوں دوں؟حمزہ شہباز

پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما حمزہ شہباز کا کہنا ہے کہ مجھے ہائیکورٹ کا قانونی تحفظ موجود ہے تو گرفتاری کیوں دوں؟ایک سوال”نیب اہلکار دیواریں پھلانگ کر گھر میں گھس گئے تو کیا کریں گے؟ کا جواب دیتے ہوئے حمزہ شہباز نے کہا کہ نیب اہلکار دیوار پھلانگ کر گھر میں گھسے تو پھرکیا ہوگا دنیا دیکھے گی۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق حمزہ شہباز کا کہنا ہے کہ مجھے ہائیکورٹ کا قانونی تحفظ موجود ہے تو گرفتاری کیوں دوں؟ لاہور ہائیکورٹ نے حکم دے رکھا ہے کہ گرفتار کرنے سے 10 روز قبل مجھے آگاہ کیا جائے گا،نیب کو لاہورہائیکورٹ کے ڈویژن بنچ کے فیصلے پرعملدرآمد کرنا چاہئے ۔

حمزہ شہباز نے کہا کہ میرے بارے میں ہائیکورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں کسی نے چیلنج نہیں کیا ، نیب کے اس چھاپے نے 12 اکتوبر کی یاد تازہ کردی،ایک سوال ”نیب اہلکار دیواریں پھلانگ کر گھر میں گھس گئے تو کیا کریں گے؟“کا جواب دیتے ہوئے حمزہ شہباز نے کہا کہ نیب اہلکار دیوار پھلانگ کر گھر میں گھسے تو پھرکیا ہوگا دنیا دیکھے گی۔حمزہ شہباز نے کہا کہ پرامن احتجاج کارکنوں کا حق ہے اور انہیں پرامن احتجاج سے روکنا قابل مذمت ہے،حکومتی کارروائیاں کارکنوں سے قیادت کی محبت نہیں چھین سکتی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں