81

حکومت ریاستی دہشت گردی پر اتر آئی :احسن اقبال

پاکستان مسلم لیگ ن کے سینیئر رہنما اور سابق وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ قائد حزب اختلاف کے گھر پہ چھاپہ اس بات کا ثبوت ہے کہ حکومت مکمل طور پہ ہواس باختہ ہو چکی ہے,ریکارڈ مہنگائی اور معاشی دیوالیہ پن کرنے کے بعد حکومت اپوزیشن کو کچلنے کے لئے ریاستی دہشتگردی پہ اتر آئی ہے, نیب کے سیاسی مقاصد کے لئے استعمال نے احتساب کے عمل کو بدترین مذاق بنا دیا ہے,نیب کو انتقام کے لیے استعمال کیا جارہا ہے جس سے احتساب کا عمل شفاف نظر نہیں آرہا،موجودہ حکومت نے عوام کو دھوکا دیا، اب یہ چاہتے ہیں کہ کوئی ان پر تنقید بھی نہ کرے،پاکستان کو جمہوریت سے شہنشایئت میں تبدیل کیا جارہا ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال کا کہنا تھا کہحکومت اوراپوزیشن نظام کے دو پہیے ہیں، ان دونوں کا ساتھ چلنا ضروری ہے،وزیراعظم شہبازشریف کا سامنا نہیں کرسکتے اس لیے ان کے پیش ہونے کے باوجود نیب نے انہیں گرفتار کیا ،ہ نیب کو انتقام کے لیے استعمال کیا جارہا ہے جس سے احتساب کا عمل شفاف نظر نہیں آرہا ہے،مشرف کے دورمیں بھی ایسا ہی ہوا تھا، ہم نہیں چاہتے کہ ملک میں احتساب پھر اسی درجے پر جائے۔احسن اقبال نے کہا کہ ہم اپنے ایک ایک فیصلے کے لیے جواب دہ ہیں، اگر اپوزیشن نے کرپشن کی ہے تو سب کو جیل میں ڈال دیں لیکن کیا عوام نے بھی کرپشن کی ہے جو ان کی زندگیاں مشکل بنادی گئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کا لائف سٹائل دنیا کے امیرترین لوگوں والا ہے لیکن وہ ٹیکس صرف ڈیڑھ لاکھ روپے دیتے ہیں، یہ آمدن سے زائد اثاثوں کا کیس ہے،وزیراعظم قوم سے دھوکا کررہا ہے،موجودہ حکومت نے عوام کو دھوکا دیا ہے،اب یہ چاہتے ہیں کہ کوئی ان پر تنقید بھی نہ کرے۔احسن اقبال کا کہنا تھا کہحکومت ڈیم کے لیے بند تونہیں بنا سکی لیکن لوگوں کی گیس، روزی بند کردی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں