88

شہبازشریف کے گھر سے واپسی کے بعد نیب کا حیران کن اعلان

نیب کی ٹیم نے حمزہ شہباز شریف کی گرفتاری کیلئے شہبازشریف کی ماڈل ٹاﺅن والی رہائشگاہ میں چھاپہ مارا جس دوران انہیں شدید مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا اور صورتحال کو پیش نظر رکھتے ہوئے ٹیم نے واپس جانے کا فیصلہ کیا تاہم اب نیب کی جانب سے اعلامیہ جاری کر دیا گیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق نیب کی جانب سے جاری کر دہ اعلامیے میں کہا گیاہے کہ نیب لاہور کی ٹیم شہبازشریف کی آمدن سے زائد اثاثہ جات اور مبینہ منی لانڈرنگ کے کیس میں ٹھوس ثبوت کی بنیاد پر گرفتاری کیلئے گئی تاہم حمزہ شہبازشریف کے گارڈز کی جانب سے غنڈہ گردی کا مظاہرہ کیا گیا اور نیب کی ٹیم کو باقاعدہ زدو کوب اور نیب ٹیم کے بعض اہلکاروں کے کپڑے پھاڑنے کے علاوہ جان سے مارنے کی دھمکیاں دی گئیں ۔

اعلامیے میں کہا گیاہے کہ نیب حکام قانون کے مطابق ملزم حمزہ شہباز شریف کی گرفتاری کے وارنٹ لے کر گئے تھے ، سپریم کورٹ کی اس حوالے سے واضح ہدایات ہیں کہ نیب کو کسی ملزم کی گرفتاری کیلئے گرفتاری سے قبل آگاہ کرنا ضروری نہیں تاہم حمزہ شہباز کی جانب سے قانون کی صریح خلاف ورزی کی گئی ، نیب کی جانب سے اس بات کی وضاحت کی جاتی ہے کہ نیب ملزم حمزہ شہباز کی ٹھوس شواہد کی بنیاد اور سپریم کورٹ کی ہدایت کی روشنی میں گرفتاری عمل میں لائے گا ۔

نیب نے اعلامیہ میں کہا کہ نیب کی جانب سے مزید وضاحت کی جاتی ہے کہ ایسے عناصر جنہوں نے نیب کی قانونی کارروائی اور کار سرکار میں جان بوجھ کر مداخلت کی ان کے خلاف قانون حرکت میں آئے گا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں