84

لیپ ٹاپ سکیم میں کرپشن ہوئی یا نہیں؟فیصلہ نیب کا ہوگا: راجہ یاسر ہمایوں

وزیر برائے اعلیٰ تعلیم راجہ یاسر ہمایوں سرفراز نے پنجاب اسمبلی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لیپ ٹاپ سکیم سے متعلق محکمہ ہائر ایجوکیشن کے جواب کو سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا، محکمہ نے لیپ ٹاپ سکیم میں کرپشن کے حوالے سے تحقیقات نہیں کی، ہائر ایجوکیشن ڈپارٹمنٹ نے موجود حقائق کی روشنی میں جواب دیا۔ انہوں نے کہا ہمارا کام الزام لگانا نہیں ، تحقیقات کروا کر مجرموں کو سزا دلوانا ہے۔

لیپ ٹاپ سکیم کے حوالے سے اسمبلی کے فلور پر پوچھے گئے سوال کی وضاحت کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ محکمہ ہائر ایجوکیشن نے جواب میں لکھا کہ نیب لیپ ٹاپ سکیم کے حوالے سے تحقیقات کر رہا ہے،البتہ بڈنگ کیلئے رولز پر عمل کیا گیا اور لیپ ٹاپ طلبہ میں تقسیم ہوئے،لیپ ٹاپ کی خریداری میں مارکیٹ سے زائدقیمت کا ذکر جواب میں نہیں ہے جس کی تحقیقات نیب کررہا ہے۔ انہوں نے کہا لیپ ٹاپ کرپشن کیس میں کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی، اگر سابق وزیر اعلیٰ کو نیب کی جانب سے کلین چٹ ملتی ہے تو وہ الزام سے بری ہوں گے۔

طلباء یونین سے متعلق سوال کے جواب میں صوبائی وزیر نے کہا کہ ہم سٹوڈنٹس یونین کے خلاف نہیں اگر مثبت مقاصد کے لئے قائم کی جائے،ماضی میں سٹوڈنٹس یونین کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کیا گیا،حکومت نہیں چاہتی کہ سٹوڈنٹس یونین کے نام پر ہمارے طلباء کا استحصال کیا جائے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ مشاورت کے بعد اور جامع حکمت عملی کے تحت سٹوڈنٹس یونین کی بحالی کا فیصلہ کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں