90

بھارتی طیارے گرانے والے قوم کے ہیرو حسن محمود صدیقی کا پہلا انٹرویو

بھارتی طیارے کو گرانے والے پوری قوم کے ہیرو اسکواڈرن حسن محمود صدیقی کا انٹرویو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہا ہے۔

اسکواڈرن حسن محمود صدیقی نے یہ انٹرویو 2016ء میں ایک نجی ٹی وی چینل کو دیا تھا۔ پروگرام میں حسن محمود صدیقی جے ایف 16 تھنڈر طیاروں سے متعلق بتاتے ہیں۔ دوران پروگرام حسن محمود صدیقی نے کہا تھا کہ ہم 24 گھنٹے تیار ہیں۔

ہم میں سے کوئی نہ کوئی 24 گھنٹے تیار رہتا ہے۔ ہمارے ائیر ڈیفنس کنٹرولر سرحدوں پر نظر رکھتے ہیں۔ جب کوئی دشمن اندر آنے کو سوچتا ہے تو ہمیں فوری اس کی اطلاع مل جاتی ہے اور اس سے پہلے کہ وہ ہماری سرحدوں کو عبور کرے ہم 6 منٹ کے اندر اس کے سر پر پہنچ جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جب کوئی ایسا طیارہ ہماری طرف آنے کو سوچے بھی تو ہم اس کے قریب آنے سے پہلے ہی پہنچ جاتے ہیں۔

حسن محمود صدیقی نے ایف 16 اڑانے کو خوبصورت جذبہ قرار دے دیا اور کہا کہ یہ دنیا کا ایک خوبصورت ترین جہاز ہے۔ اس طیارے کو اڑانا میرے لیے فخر کی بات ہے اور ہم ان طیاروں کی بدولت ہی خطے میں بہت اوپر کھڑے ہیں۔ ایف 16 کو اڑانا اور اس سے دشمن کا مقابلہ کرنا میرے لیے ایک فخر کی بات ہے۔

حسن محمود صدیقی نے مزید کہا کہ ہماری ٹریننگ اتنی زبردست کی گئی ہے کہ ہم کبھی بھی دشمن کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر مقابلہ کر سکتے ہیں۔

حسن محمو دصدیقی نے کہا جب دشمن سے مقابلے کے لیے جاتے ہیں تو اس وقت پیدا ہونے والا جذبہ اتنا خبوصورت ہوتا ہے کہ اس کو بیان نہیں کیا جا سکتا اور دشمن سے لڑںے کا جذبہ اس وقت اللہ تعالیٰ دیتے ہیں۔ یہ جذبہ دشمن کا مقابلہ کرنے اور اس پر جھپٹنے کا ہے۔ واضح رہے 27 فروری کو پاک فضائیہ کے بہادر سپوت اسکواڈرن لیڈر حسن محمود صدیقی بھارت کے دو طیارے مار گرائے تھے۔

جس کے بعد سوشل میڈیا پر بھارتی طیاروں کو مار گرانے والے پاکستانی پائلٹ اسکواڈرن لیڈر حسن محمود صدیقی کی تصاویر گردش کرنے لگیں۔۔

سوشل میڈیا صارفین نے قوم کے اس ہیرو کوزبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہمیں آپ پر فخر ہے ، آج آپ نے بھارتی طیاروں کو گرا کر ایم ایم عالم کی یاد تازہ کردی۔ جس طرح ایم ایم عالم نے کچھ سیکنڈ میں بھارتی فضائیہ کے طیارے تباہ کر کے ان کو سبق سکھایا تھا ٹھیک ویسے ہی اسکواڈرن لیڈر حسن محمود صدیقی نے بھی بھارتی فضائیہ کے طیارے کو مار گرایا اوربھارت کو یہ باور کروادیا کہ اگر پاکستان کی حدود میں گھُسنے کی کوشش کی گئی تو انہیں خاک میں ملا دیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں