74

اسلام آباد : امام بارگاہ میں فائرنگ، ایک شخص جاں بحق

اسلام آباد کے سیکٹر آئی ایٹ میں واقع امام بارگاہ باب العلم میں نامعلوم افراد کی فائرنگ کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق جبکہ 4زخمی ہوگئے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کے علاقے سیکٹر آئی ایٹ میں واقع امام بارگاہ باب العلم کے باہر گھات لگا کر بیٹھے موٹرسائیکل سوار نامعلوم افراد اچانک رونما ہوئے اور کلاشنکوف کے ساتھ نمازیوں پر اندھا دھند فائرنگ کردی اور فرار ہوگئے۔

گولیوں کی زد میں آکر5افراد زخمی ہوگئے جن میں سےایک شخص زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی جان کی بازی ہارگیا۔اطلاع ملنے پرپولیس کی بھاری نفری اور ریسکیو کی ٹیم موقع پر پہنچی جنہو ں نے زخمیوں کو پمز ہسپتال منتقل کردیا جہاں زخمیوں کا علاج معالجہ جاری ہے۔ پولیس نے علاقے کی ناکہ بندی کردی ہے جبکہ مشکوک افراد کی نگرانی بھی شروع کردی ہے۔

پولیس حکام کا کہناہے کہ واقعہ ذاتی دشمنی کانتیجہ تھا یا ٹارگٹ کلنگ پوسٹ مارٹم رپورٹ اور زخمیوں کے بیان سے قبل کچھ بھی کہناقبل ازوقت ہوگا۔جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کرنے کرکے تجزیے کیلئے لیبارٹری بھجوادیے ہیں جبکہ نامعلوم افراد کیخلاف مقدمہ بھی درج کر لیاگیا ہے ۔

پولیس کا کہنا ہے کہ امام بارگاہ فائرنگ میں جاں بحق ایک شخص کی شناخت حبدار حسین کے نام سے ہوئی ہے جو انٹیلی جنس بیورو کاملازم تھا۔

مجلس وحدت المسلمین کے سربراہ علامہ ناصر عباس نے فائرنگ کے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی دارالحکومت میں ٹارگٹ کلنگ کا واقعہ ریاستی اداروں کی کمزوری ثابت کرتا ہے۔

قائد ملت جعفریہ کے سربراہ علامہ ساجد نقوی نے امام بارگاہ کے باہر فائرنگ میں ملوث ملزمان اور ان کے سہولت کاروں کو گرفتار کرکے تختہ دار پر لٹکانے کا مطالبہ کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ دارالحکومت میں دہشت گردی کے واقعے سے حکومت اور سیکیورٹی اداروں کی ناقص کارکردگی عیاں ہوگئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں