73

کرکٹ کی تاریخ کا انوکھا ریکارڈ، 2 رنز پر پوری ٹیم ڈھیر

یہ انوکھا ریکارڈ بھارت کی ڈومیسٹک کرکٹ ٹیم کے خواتین کے ایک میچ میں بنا۔ 50 اوورز کے میچ میں پوری ٹیم صرف دو رنز بنا سکی۔ حیران کن بات یہ ہے کہ اس میں ایک رن وائڈ بال کا تھا۔

کرکٹ کے کھیل میں آئے دن کوئی نہ کوئی ریکارڈ بنتے اور ٹوٹتے رہتے ہیں لیکن حال ہی میں ایک ایسا ریکارڈ بنا ہے جس کے بارے میں شاید ہی کسی نے سوچا ہو گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ روز بھارتی ڈومیسٹک کرکٹ میں خواتین کے ایک میچ میں کیرالا اور ناگالینڈ کی ٹیمیں میدان میں اتریں۔ ناگالینڈ نے ٹاس جیتا اور پہلے بیٹںگ کا فیصلہ کیا جو اس کیلئے اتنا نقصان دہ ثابت ہوا جس کا ازالہ ہی ممکن نہیں تھا۔

ناگالینڈ کی جانب سے خاتون کھلاڑی مینکا میدان میں اتریں اور انتہائی سست روی سے کھیل پیش کرنا شروع کر دیا۔ اس بات کا اندازہ اس سے لگایا جا سکتا ہے کہ انہوں نے اپنا پہلا رن 18 گیندوں کا سامنا کرنے کے بعد لیا۔ اور یہ واحد رن تھا جو اس ٹیم کے حصے میں آیا۔ اس کے بعد 16ویں اوور میں ان کی وکٹ گرنے کے بعد ٹیم کے کھلاڑی حقیقت میں خزاں کے پتوں کی طرح جھڑنے لگے۔

ناگالينڈ کی پوری کی پوری ٹيم 17ويں اوور ميں صرف 2 رنز پر آل آؤٹ ہو گئی۔ ان ميں ايک رن وائڈ بال کا تھا جبکہ ايک رن مينکا نے بنايا۔ اس ٹيم کی باقی تمام خاتون کھلاڑیوں نے کوئی سکور نہ بنایا اور پويلين لوٹ گئيں۔

ميچ جيتنے کیلئے کيرلا کی ٹيم کو صرف 3 رنز کا ہدف درکار تھا۔ ناگالينڈ کی جانب سے ديپيکا کينٹورا نے پہلی گيند وائڈ کرائی اور پھر دوسری، ليکن ميچ کی پہلی صحيح بال پر کيرلا کی کھلاڑی انسو راجو نے چوکا لگا ڈالا۔ يوں کيرلا نے يہ ميچ صرف ايک ہی بال پر اور دس وکٹوں سے جيت ليا۔

واضح رہے کہ کرکٹ کی تاريخ ميں کسی بھی ڈوميسٹک ميچ کا سب سے کم سکور 6 رنز تھا جو بھارت ہی کی ايک ٹيم نے انگلينڈ کے خلاف 1810ء ميں بنايا تھا۔ یوں تقریبا ایک صدی بعد ناگالينڈ کی ٹيم نے ایک نئی تاريخ بنا ڈالی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں