88

نکاح نامہ میں شق کا فائدہ، خاتون نے خود کو طلاق دیدی

لاہور: (31 اکتوبر 2017) ساندہ کی رہائشی ایک خاتون پروین اپنے نکاح نامے میں خانہ 18 کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنے آپ کو خود ہی طلاق دینے کے بعد حق مہر اور طلاق سرٹیفکیٹ وصولی کیلئے سول کورٹ پہنچ گئی، جہاں عدالت میں ایک نئی بحث شروع ہو گئی کہ کوئی بھی خاتون خود کو طلاق دے سکتی ہے یا نہیں؟

خاتون پروین کی عدالت سے استدعا تھی کہ چونکہ اس نے نکاح نامے کے خانہ 18 کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنے آپ کو خود ہی طلاق دیدی ہے، لہذا اس کی طلاق کا سرٹیفکیٹ جاری کیا جائے اور اس کے سابق شوہر سے حق مہر دلایا جائے۔ بعض قانونی ماہرین نے اس عمل کو شریعت کیخلاف قرار دیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں