143

توہین آمیز مواد شائع کرنے پر نوجوان کو عمر قید کی سزا

ضلع رحیم یار خان کے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے انٹرنیٹ پر توہین آمیز مواد شائع کرنے کا جرم ثابت ہونے پر مجرم کو عمر قید کی سزا سنادی۔

ضلع کے پولیس افسر عمر سلیم کے ترجمان نے ڈان کو صادق آباد کے صدر تھانے کے ایس ایچ او عبدالہادی کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ وقاص احمد بھیٹ نامی نوجوان کے خلاف گزشتہ سال جولائی میں شکایت درج کی گئی تھی۔

شکایت میں وقاص احمد پر سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک پر توہین آمیز خاکے شائع کرنے کا الزام لگاتے ہوئے موقف اختیار کیا گیا تھا کہ اس سے مسلمانوں کے جذبات و احساسات مجروح ہوئے۔

شکایت کے کچھ روز بعد نوجوان کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا جبکہ ٹرائل کا آغاز دو ماہ قبل ہوا۔

ملزم وقاص احمد بھیٹ کو ضلعی انتظامیہ کی ہدایت پر 90 روز کے لیے سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر ڈسٹرکٹ جیل میں نظر بند بھی رکھا گیا تھا، جبکہ مقدمے کی حساسیت کے باعث سماعت بھی جیل میں کی گئی۔

ہفتہ کے روز ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج خورشید احمد انجم نے مقدمے کا فیصلہ سناتے ہوئے وقاص احمد بھیٹ کو عمر قید اور 10 لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل رواں سال جون میں بہاولپور کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد شائع کرنے کے جرم میں ایک شخص کو سزائے موت سنائی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں