Home / اہم خبریں / مشال قتل کیس کا مرکزی گواہ اپنے بیان سے منحرف

مشال قتل کیس کا مرکزی گواہ اپنے بیان سے منحرف

ایبٹ آباد: مشال خان قتل کیس کا مرکزی گواہ اپنے بیان سے منحرف ہو گیا جب کہ مقتول کے والد کا کہنا ہے کہ ملزمان گواہ پر دباؤ ڈال رہے ہیں۔

مشال خان قتل کیس کی نویں سماعت ہری پور سینٹرل جیل میں شروع ہوئی تو وکیل استغاثہ نے انسداد دہشت گردی عدالت کے جج کو بتایا کہ کیس کا چشم دید گواہ سریاب خان اپنے بیان سے منحرف ہو گیا ہے۔

مردان کی عبدالولی خان یونی ورسٹی کے طالبعلم سریاب خان نے عدالت میں اپنے پہلے بیان میں کہا تھا کہ جس روز مشال خان کو قتل کیا گیا اس روز وہ جائے واردات پر موجود تھا اور اس نے کیس کے مرکزی ملزم عمران علی کو مشال پر گولی چلاتے بھی ہوئے دیکھا۔

مشال کے والد اقبال خان کا کہنا ہے کہ ملزمان کی جانب سے گواہ پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے جس کی وجہ سے اس نے اپنا بیان تبدیل کیا اور وہ اس حوالے سے پشاور ہائی کورٹ سے رابطہ کریں گے۔

واضح رہے کہ آج ہونے والی سماعت کے دوران کیس کے 4 گواہان نے اپنا بیان ریکارڈ کرانا تھا تاہم پہلے ہی گواہ کے اپنے بیان سے منحرف ہو جانے کے بعد انسداد دہشت گردی عدالت کے جج فضل سبحان نے سماعت 25 اکتوبر تک ملتوی کر دی۔

یاد رہے کہ مشال خان کو سوشل میڈیا پر مبینہ گستاخانہ مواد شائع کرنے کے الزام میں مشتعل ہجوم نے رواں برس 13 اپریل کو قتل کر دیا تھا۔

Check Also

انتخابات کے بعد پاکستان کے پانچ بڑے مسائل

پاکستان میں انتخابات کے بعد نئی حکومت کو کئی طرح کے مسائل کا سامنا کرنا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *