71

ہ سیکیورٹی معاملات اور معاشی صورت حال بہتر ہو رہی ہے اور رواں سال نومبر دسمبر تک لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ہوجائے گا۔وزیر خزانہ اسحاق ڈار

زیر خزانہ اسحاق ڈار پریس کانفرنس کر رہے تھے، انہوں نے بتایا کہ 18 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کے باوجود سرکلر

ڈیٹ 503 ارب روپے تھا اور خوش آئند بات یہ ہے کہ اس سال کے آخر تک ملک سے لوڈ شیڈنگ کا مکمل خاتمہ بھی

ہوجائے گا۔

گردشی قرضوں کا حجم 400 ارب سے کم ہے، براہ راست سرمایہ کاری 150 فیصد اضافے کے ساتھ رواں دواں ہے اور

انتھک محنت کر کے اقتصادی ترقی کی شرح کو 3.5 فیصد سے 5.7 فیصد پر پہنچایا جب کہ ورلڈ بینک بھی پاکستان

سے متعلق جاری اپنے اعداد و شمار درست کرے گا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ کنفیوژنہ ہوں، ہمیں مزید محنت کی بہت ضرورت ہے چنانچہ معاشی صورت حال میں سب نے

اپنا حصہ ڈالنا ہے اس لیے منفی باتوں کی ضرورت نہیں بلکہ محنت کرنا ہوگی،عالمی اداروں نے بھی پاکستان کی

معیشت کے مستحکم ہونے کا اعتراف کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں