48

قادیانیوں کو مسلمان قرار دینے پر رانا ثنا اللہ کے خلاف احتجاج

صوبائی وزیر قانون رانا ثنا اللہ کے قادیانیوں کے متعلق بیان کے خلاف ملک کے کئی شہروں میں لوگ سراپا احتجاج بن گئے ۔ رانا ثنا اللہ کیخلاف احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں جبکہ مظاہرین نے ختم نبوت کے قانون میں تبدیلی کرنے والوں اور رانا ثنا اللہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ۔

لاہور پریس کلب کے باہر تحریک لبیک یارسول االلہ کے آصف اشرف جلالی کی سربراہی میں رانا ثنا اللہ کے خلاف احتجاج کیا گیا اور نعرے بازی کی گئی ۔ پولیس کی جانب سے تحریک لبیک یا رسول اللہ کے رہنما آصف اشرف جلالی کو ساتھیوں کو گرفتار کرلیا ۔

فیصل آباد میں وزیر قانون پنجاب رانا ثنا اللہ کے قادیانیوں سے متعلق بیان کیخلاف کچہری بازار میں احتجاجی ریلی نکالی گئی ۔ ریلی میں شہریوں کی بڑی تعداد شریک ہوئی اور مظاہرین نے شدید نعرے بازی بھی کی ۔ ریلی کے شرکا نے رانا ثنا اللہ کے خلاف فوری کا رروائی کا مطالبہ بھی کیا۔

صادق آباد میں مذہبی وسماجی جماعتوں نے حلف میں تبدیلی کے خلاف ریلی نکالی ۔ ریلی کے شرکا نے قانون ختم نبوت میں ترمیم کرانے والوں کو سزا دینے کا مطالبہ کیا ۔ ریلی غوثیہ چوک سے شروع ہو کر ریلوے چوک پراختتام پذیر ہوئی ۔

بہاولپور میں مذہبی جماعتوں نے رانا ثنا اللہ کے بیان پر شدید غم و غصے کا اظہار کیا ۔جبکہ ختم نبوت کے قانون میں ترمیم کی کوشش کرنے والے کرداروں کو قرار واقعی سزا کا مطالبہ کیا ۔

گوجرا نوالہ میں لوگوں نے رانا ثنا اللہ کے خلاف شدید احتجاج کیا ۔ مظاہرین نے ختم نبوت کے قانون میں تبدیلی اور رانا ثنا اللہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں