257

پاکستان نے ورلڈ الیون کو شکست دے دی

لاہور(آن لائن) پاکستان نے آزادی کپ کے تیسرے اور فیصلہ کن ٹی ٹوئنٹی میچ میں ورلڈ الیون کو 33 رنز سے شکست دیکر ہوم سیریز2-1سے اپنے نام کرلی ہے ،احمد شہزاد کو شاندار89رنز کی اننگز کھیلنے پر مین آف دی میچ جبکہ بابر اعظم کو سیریز میں بہترین کارکردگی پر مین آف دی سیریز قرار دیا گیا۔

ہفتہ کے روز لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں کھیلے جانے والے آزادی کپ کے تیسرے اور آخری ٹی20 میچ میں ورلڈ الیون کے کپتان فاف ڈوپلیسی نے ٹاس جیت کر پہلے پاکستان کو کھیلنے کی دعوت دی ۔

پاکستانی بلے بازوں نے پراعتماد انداز میں کھیل شروعات کیں، اوپنر فخر زمان سیمی کے ہاتھوں27 رنز پر رن آؤٹ ہوئے،انھوں نے 25 گیندوں پر ایک چھکے اور دو چوکوں کی مدد سے 27 رنز بنائے تھے جبکہ احمد شہزاد نے بابر اعظم کے ہمراہ پراعتماد انداز میں کریز سنبھالی۔ وہ بھی میچ کے 17ہویں اوور میں 89 رنز پر رن آؤٹ ہوئے۔شہزاد نے 55 گیندوں پر آٹھ چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 89 رنز بنائے۔ تیسرے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی بابر اعظم تھے جو 48 رنز پر کیچ آؤٹ ہو گئے۔ انھوں نے پانچ چوکوں کی مدد سے 33 گیندوں پر 48 رنز بنائے۔عماد وسیم کوئی رن نہ بنا پائے ان کی جگہ سرفراز کریز پر آئے، اس طرح پاکستان نے مقررہ 20 اوورز میں چار وکٹوں کے نقصان پر 183 رنز بنائے۔

پاکستان کے 183 رنز کے جواب میں ورلڈ الیون کو پہلا نقصان اوپنر تمیم اقبال کی صورت میں ہوا جنھیں عثمان خان نے آؤٹ کیا۔ انھوں نے 10 گیندوں پر تین چوکوں کی مدد سے 14 رنز بنائے تھے۔ دوسرے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی کٹنگ تھے جو فقط پانچ رنز بنا پائے جبکہ اگلی ہی گیند پر حسن علی نے ہاشم آملہ کو رن آؤٹ کر دیا وہ 21 رنز بنا پائے۔چوتھے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی جارج بیلے تھے جو تین رنز بنا پائے۔ڈوپلیسی 13 رنز بنا پائے انھیں شاداب خان نے آؤٹ کیا۔ ورلڈ الیون کو چھٹا نقصان پریرا کے آؤٹ ہونے کی صورت میں ہوا۔ انھیں رومان ریئس کی بال پر بابر اعظم نے کیچ آؤٹ کیا۔ انھوں نے دو چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 33 رنز بنائے۔ڈیوڈ ملر نے 32 رنز بنائے تھے جب انھیں حسن علی کی بال پر بابر اعظم نے کیچ آؤٹ کیا۔ ڈیرن سیمی کا ساتھ دینے کے لیے مورنی مورکل آئے تاہم انھیں بابر اعظم نے دوسری ہی بال پر رن آؤٹ کر دیا۔ڈیرن نے 24 رنز بنائے اور وہ ناٹ آؤٹ رہے۔ورلڈ الیون کی ٹیم 8وکٹوں کے نقصان پر 150رنز بناسکی اور پاکستان نے ورلڈ الیون کو 33 رنز سے شکست دے کر سیریز 2ـ1 سے جیت کر اپنے نام کر لی ہے۔ پاکستان کی طرف سے احمد شہزاد کو شاندار بیٹنگ کی بدولت مین آف دی میچ قرار دیا گیا جبکہ بابر اعظم مین آف دی سیریز قرار پائے ۔

یا د رہے کہ سیریز کے پہلے میچ میں پاکستان نے جب کہ دوسرے میچ میں ورلڈ الیون نے ایک سنسنی خیز مقابلے کے بعد آخری اوور کی پانچوں گیند پر پاکستان کو شکست دی تھی۔

میچ کے بعد گفتگو کرتے ہوئے ورلڈالیون کے کپتان فاف ڈو پلیسی نے کہا کہ پاکستان کے شائقین بہت اچھے ہیں ،پاکستان میں کرکٹ کھیل کر اچھا لگا،پاکستان کے کرکٹ شائقین کو دیکھ کر خوشی ہوئی ،نوجوان کھلاڑیوں پر مشتمل پاکستان بہت مضبوط ٹیم ہے ،پاکستان میں کرکٹ کی واپسی بڑی کامیابی ہے ،یہاں ملنے والی محبت کا شکریہ۔جبکہ پاکستانی قائد سرفراز احمد نے ٹیم کی جیت کو تمام کھلاڑیوں کی کارکردگی کا نتیجہ قرار دیا انہوں نے کہا تمام لڑکوں نے کم بیک کیا ہے اور زبردست کارکردگی دکھائی ہے انہوں نے کہ تمام کھلاڑیوں نے فٹنس پر توجہ مرکوز رکھی ہے ،ملک میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے ،ان کھلاڑیوں کو موقع ملے تو یہ اچھی کارکردگی دکھائیں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں