95

اسنیپ چیٹ اور انسٹاگرام کے لیے خطرہ

سوشل میڈیا کے اس دور میں جہاں اسنیپ چیٹ، انسٹاگرام، فیس بک اور ٹوئٹر سمیت سیکڑوں دلفریب اور دلچسپ سوشل سائٹس موجود ہیں، وہیں اگر ایک اور نئی سوشل شیئرنگ ویب سائٹ سامنے آجائے تو اسے لوگوں میں جگہ بنانے میں مشکل ضرور پیش آئے گی۔

لیکن امریکی نوجوان کی جانب سے متعارف کرائی گئی نئی سوشل شیئرنگ ایپلی کیشن پولی گرام‘ کو دیکھ کر لگتا ہے کہ وہ جلد ہی مقبولیت حاصل کرلے گی۔

یہ بھی سچ ہے کہ سیکڑوں سوشل سائٹس ہونے کے باوجود ہر ویب سائٹ کی اپنی ہی اہمیت اور اپنا ہی مزہ ہے، صارفین بیک وقت نہ صرف فیس بک اور ٹوئٹر استعمال کرتے ہیں، بلکہ وہ اسنیپ چیٹ اور انسٹاگرام کو بھی ساتھ ہی ساتھ میں استعمال کر رہے ہوتے ہیں۔

لیکن پولی گرام کچھ زیادہ ہی مختلف اور دلفریب شیئرنگ ویب سائٹ ہے، جس کے فیچرز نئے صارفین کو اپنی طرف متوجہ کرنے میں کامیاب جا رہے ہیں۔

پولی گرام سان فرانسسکو کے نوجوان فریار غضنفری کی جانب سے متعارف کرائی گئی نئی سوشل شیئرنگ ایپلی کیشن ہے، جو انسٹاگرام اور اسنیپ چیٹ کی طرح کام کرتی ہے۔

پولی گرام اپنے صارفین کے چہرے کے تاثرات ڈٹیکٹ کرکے انہیں ایموجی میں تبدیل کرنے کی سہولت دیتی ہے۔

یعنی پولی گرام صارف اپنے موبائل کے سامنے جس طرح اپنا چہرہ بنائے گا، اسی طرح کا ہی ایک ایموجی موبائل پر نمودار ہوگا، جسے وہ اپنے ساتھیوں اور دوستوں کے ساتھ شیئر کرسکے گا۔

یہی نہیں پولی گرام اپنے صارفین کو یہ سہولت بھی دیتا ہے کہ وہ ایموجیز کے ذریعے یہ بھی دیکھ سکیں گے کہ ان کی پوسٹ دیکھنے والے شخص کے تاثرات کس طرح تھے۔

یعنی اگر آپ پولی گرام پر کوئی پوسٹ شیئر کریں گے تو آپ یہ بھی دیکھ سکیں گے کہ آپ کی پوسٹ کو کس دوست نے کس چہرے اور تاثر کے ساتھ دیکھا۔

تاہم آپ اپنے دوستوں کے چہرے اور تاثرات کو بھی ایموجی کی شکل میں دیکھ سکیں گے۔

پولی گرام کے فیچر کی بات یہیں ختم نہیں ہوتی، بلکہ اس سوشل شیئرنگ ویب سائٹ کے ذریعے آپ ویب سائٹ استعمال کرنے والے صارفین کو بھی ایموجیز کی شکل میں دیکھ سکتے ہیں۔

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ پولی گرام میں استعمال کی گئی جدید ٹیکنالوجی کے باعث اس میں شیئر کی جانے والی تصاویر میں میک اپ کا ٹچ دیا جاتا ہے، جب کہ ویڈیوز اور تصاویر کو اعلیٰ کوالٹی میں بھی تبدیل کردیا جاتا ہے۔

اور ساتھ ہی ساتھ پولی گرام میں صارفین کو اپنی تصاویر کے کئی اسکرین شاٹ بھی فراہم کرنے کا فیچر موجود ہے۔

پولی گرام کو گوگل اور ایپل اسٹور سے بھی ڈاؤن لوڈ کیا جاسکتا ہے، یہ انسٹاگرام اور اسنیپ چیٹ کی طرح کام کرتی ہے۔

اس نئی سوشل شیئرنگ ویب سائٹ کو 26 اگست کو صارفین کے لیے پیش کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں