29

سرکاری جامعات میں غیرقانونی تعیناتیاں

محکمہ ہائر ایجوکیشن سرکاری جامعات میں غیر قانونی تعیناتیاں روکنے میں ناکام، چار اہم سرکاری جامعات میں رجسٹرار کی سیٹوں پر غیر قانونی افراد تعینات ہیں۔

محکمہ ہائر ایجوکیشن پنجاب کے قواعد کے مطابق سرکاری جامعات کی انتظامی سیٹوں پر تعیناتی کے لئے گورنر پنجاب کی منظوری لازمی ہے جس کے تحت یونیورسٹی انتظامیہ رجسٹرار کی سیٹ پر تعیناتی کے لئے تین نام گورنر پنجاب کو بھیجنے کی پابند ہے۔ جائزہ لینے کے بعد گورنر پنجاب کسی ایک نام کی منظوری دینے کے مجاز ہیں۔ لاہور کی تین سمیت چار اہم سرکاری جامعات میں غیر قانونی رجسٹرار تعینات کئے گئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق گورنمنٹ کالج یونیورسٹی کے رجسٹرار صبور خان، یونیورسٹی آف ایجوکیشن کے رجسٹرار ڈاکٹر منظور، پنجاب یونیورسٹی کے رجسٹرار خالد خان اور یونیورسٹی آف سرگودھا کے رجسٹرار مدثر خان غیر قانونی طور پر تعینات کیے گئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق محکمہ ہائر ایجوکیشن پنجاب کی جانب سے متعلقہ جامعات میں مستقل رجسٹرار کی تعیناتی اور گورنر پنجاب سے منظوری کے لئے کئی بار ہدایت جاری کی گئی ہیں۔ متعلقہ وائس چانسلرز نے ہدایات کو نظر انداز کرتے ہوئے قواعد کے برعکس من پسند افسران کو غیر قانونی طور پر اہم عہدوں پر تعینات کر رکھا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں